عالمی یوم اوزون کی مناسبت سے سمینار کا انعقاد

Spread the love

 لسبیلہ یونیورسٹی آف ایگریکلچر  واٹر اینڈ میرین سائنسز اوتھل
میں ادارہ تحفظ ماحولیات بلوچستان کے زیر اہتمام بائکو،  ڈی جی سیمنٹ، فالکن سیمنٹ اور  لسبیلہ یونیورسٹی آف ایگریکلچر واٹر اینڈ میرین سائنسز کے اشتراک سے عالمی یوم اوزون کی مناسبت سے ایک سمینار کا انعقاد کیا گیا ۔جس میں وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر دوست محمد بلوچ  ،محکمہ ماحولیات بلوچستان کے سیکریٹری عبدالصبور کاکڑ, ایڈیشنل سیکریٹری جہانگیر خان کاکڑ, ڈائریکٹر جنرل عبدالولی کاکڑ، پرو وائس چانسلر ڈاکٹر جلال  فیض،  رجسٹرار ڈاکٹر احمد نواز کھوسہ، مختلف شعبہ جات کے ڈینز   ڈائریکٹر ٹیکنیشن انجینئر محمد خان, پاکستان میری ٹائم سیکیورٹی ایجنسی کے کمانڈر سمیع  اللہ,لسبیلہ یونیورسٹی  اورک کے ڈائریکٹر ڈاکٹر محمد اسلم بزدار, میرین سائنسز فیکلٹی  کے لیکچرر ظفراللہ جتک , اساتذہ کرام ،ایڈمنسٹریٹیو آفیسران سمیت  طلباء و طالبات کثیر تعداد میں شریک تھے ۔مقررین سے خطاب کرتے ہوئے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر دوست محمد بلوچ نے کہا کہ ادارہ تحفظ ماحولیات بلوچستان کی  مختلف قسم کی آلودگی سمندری حیات کی تحفظ سمیت و دیگر معاملات میں اس کا کردار اہمیت کا حامل ہے ۔انہوں نے کہا کہ لسبیلہ یونیورسٹی اور ادارہ تحفظ ماحولیات بلوچستان مفاہمتی یادداشت کے تحت مل کر کام کر رہے ہیں ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ اس حوالے طلبا کو کردار ادا کرنا چاہیے کہ ماحول کو آلودگی اور دیگر نقصانات سے کس طرح بچایا جا سکتا ہے ۔سمینار سے خطاب کرتے ہوئے محکمہ ماحولیات حکومت  بلوچستان کے سیکریٹری عبدالصبور کاکڑ نے کہا کہ ادارہ مختلف جامعات خصوصا لسبیلہ یونیورسٹی جو کہ ایک اہم مقام پر واقع ہے کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے.  انہوں نے کہا کہ لسبیلہ یونیورسٹی میں میرین سائنسز  جیسا اہم شعبہ  قائم ہے  متعلقہ فیکلٹی کے  ماہرین سے افادیت حاصل کی جا رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ اعلی تعلیمی اداروں سے منسلک ہونے کا مقصد ماحولیات کی بہتری کے لیے کام کرنا ،ماحول کو آلودگی سے پاک اور  سمندری حیات کی تحفظ کو یقینی بنانے سمیت مختلف قسم کی تجاویز حاصل کر کے ان پر  عمل درآمد کو یقینی بنانا ہے ۔ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان میری ٹائم سیکیورٹی ایجنسی کے کمانڈر سمیع اللہ نے کہا کہ سمندری حیات کے تحفظ اور بقا کے لیے اپنا کردار ادا کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ غیر قانونی طور پر شکار کرنے اور اس میں ملوث ملزمان کو حراست میں لے کر متعلقہ محکموں کے حوالے کیا جاتا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ قانون کی پاسداری کرنا ہم سب کی ذمہ داری ہے ۔تقریب کے شرکاء سے ڈاکٹر محمد اسلم بزدار، ڈاکٹر سونیا طارق، ڈاکٹر عزیز بڑیچ سمیت دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے