حب ضلع کا لولی پاپ دے کر 40 سالہ حکمرانی کا حساب نہیں چھپایا جا سکتا..جام کما ل خان

Spread the love

وندر،)ویب نیوز ایچ ڈی )بھوتانی برادران کو چیلنج کرتا ہوں آؤ حساب کریں کس نے عوام مفاد کے منصوبوں پر زیادہ کام کیا ہے حب ضلع کا لولی پاپ دے کر 40 سالہ حکمرانی کا حساب نہیں چھپایا جا سکتا لسبیلہ کی دو ضلعوں میں تقسیم کس صورت قبول نہیں کریں گے ان خیالات کا ا ظہار بلوچستان عوامی پارٹی کے مرکزی صدر و سابق وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے جمعہ کے روز وندر اور ڈام میں عوامی اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ لسبیلہ کی دو حصوں میں تقسیم کے خلاف ہر حد تک جاؤں گا انہوں نے بھوتانی برادران اور وزیر اعلیٰ بلوچستان کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وزیر اعلیٰ بلوچستان قدوس بزنجو آواران کا ایم پی اے ہے اور حب میں رہائش پزیر ہے اسے یاد رکھنا چاہئے کہ اس کا جینا مرنا اب اسی علاقے میں ہے اس لئے یہاں کے پر امن لوگوں کے خلاف صالح بھوتانی کی اس سازش کا حصہ نہ بنے انہوں نے بھوتانی برادران کو چیلنج کیا کہ وہ آئیں اور موازنہ کریں کہ عوامی فلاح و بہبود کے حوالے سے کس نے کتنا کام کیا ہے انہوں نے حب کے عوام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ وہ چالیس سال سے منتخب ہونے والے نمائندوں سے حساب لیں کہ انہوں نے کتنے ہسپتال بنائے ہیں کتنی یونیورسٹیاں بنائی ہیں کتنے لاء کالج بنائے ہیں حب میں جتنے بھی بڑے منصوبے ہیں وہ جام خاندان کی مرہون منت ہیں گزشتہ چالیس سال سے ایک سازش کے تحت عوام کو پسماندہ رکھنے والے نمائندے اب حب ضلع کا چورن بیچ کر اپنی دوکان چمکانے کی ناکام کوشش کر رہے ہیں لیکن انہیں شاید خبر نہیں کہ یہ شوشل میڈیا کا دور ہے اور عوام اب باشعور ہوچکے ہیں بعد اذاں انہوں نے ڈام میں بلوچستان عوامی پارٹی کے دفتر کا افتاح کیا جبکہ حب کو ضلع بنانے کے خلاف وندر شہر میں نکالے جانے والی ریلی کی قیادت بھی کی

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے