آنے والے دو ماہ پاکستان کی تاریخ کے مشکل ترین ماہ ثابت ہوں گے , میر اکرم بلوچ آوارانی

Spread the love

پاک سر زمین پارٹی کے مرکزی سینئر رہنما میر اکرم بلوچ آوارانی نے پیشنگوئی کی ہے کہ پاکستان اس وقت کٹھن ترین وقت سے گزر رہا ہے اور آنے والے دو ماہ پاکستان کی تاریخ کے سخت ترین ماہ ہوں گے سیاسی بحران شدت اختیار کر لے گا اور اپنے ساتھ مسائل کے انبار لگا دے گا معاشی حالات اس وقت بدترین حالات میں ہیں کاروباری طبقہ اپنی بقاء کی جنگ لڑ رہا ہے عوام سیلاب سے مہنگائ سے اور معاشرے میں بڑہتے کرائم اور وارداتوں سے نبردآزما ہیں پاکستان کا نقشہ بدل کر رہ گیا ہے اور ان دو ماہ میں صورتحال مزید گھمبیر ہوتی چلی جائے گی جسکا تدارک ہوتا کہیں نظر نہیں آ رہا غیر ملکی طاقتیں پاکستان کو عدم استحکام کی جانب دھکیلنے کیلئےاور جو غیر ملکی اداروں کے حمایت یافتہ ہیں انکا کردار بڑہتا چلا جا رہا ہے جو نہایت تشویشناک ہےاس وقت وقت کی اولین ضرورت سیاسی بحران کو ختم کرنا ہے جب تک سیاسی بحران ختم نہیں ہو گا ملکی حالات مزید ڈانوا ڈول ہوں گے مقابلے اور اناء کی اس فضاء کو ختم کرنے کیلئے ہمیں الیکشن میں جانا ہو گا نہیں تو معاشی صورتحال ہاتھوں سے نکل جائے گی مہنگائ آئوٹ آف کنٹرول ہو ہی چکی ہے غریب اور مڈل کلاس کے منہ سے نوالا بھی چھن جائے گا امن و امان کی صورتحال تباہ ہو جائے گی ملک میں انارکی پھیل جائے گی وارداتوں اور سٹریٹ کرائمز میں بے تہاشا اضافہ ہو جائے گا قتل و غارتگری عام ہو جائے گی اور پھر سب سوچ سکتے ہیں کیا ملک اس کا متحمل ہو سکے گا پاکستان کے دشمنوں کا یہی منصوبہ ہے مگر افسوس سے کہا جاتا ہے پاکستان کے کچھ نادان دوست نادانستہ اس کھیل میں شامل ہو گئے ہیں مگر جب حقیقت ان پر آشکار ہو گی تب اس محاورے کے علاوہ ہمارے پاس اور کچھ نہیں رہے گ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے